غدیر کو غدیر کیوں کہتے ہیں ؟

Sun, 04/16/2017 - 11:02

لفظ «غدیر» لغت میں  چند معنوں میں استعمال کیا گیا ہے جیسے پانی لینے کی جگہ [1]   پانی کا ٹکڑا[2] وہ جگہ جہاں بارش کا پانی جمع ہوتا ہو۔[3]  

لفظ «غدیر» لغت میں  چند معنوں میں استعمال کیا گیا ہے جیسے پانی لینے کی جگہ [1]   پانی کا ٹکڑا[2] وہ جگہ جہاں بارش کا پانی جمع ہوتا ہو۔[3]  
غدیر خُمّ  یہ  وہ جگہ ہے جہاں سے  شہروں کا راستہ جدا ہوتا تھا اور اس وقت اس جگہ کو «جُحفه» بھی کہا جاتا تھا اس جگہ سے حاجی ایک دوسرے سے جدا ہوتے تھے البتہ اس جگہ کا پرانا نام تو جحفہ ہی ہے لیکن غدیر کیوں رکھا گیا تو اس کا جواب یہ ہے کہ یہ جگہ رسول خدا (صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم ) کے اس دنیا میں آنے کے بعد بہت سر سبز ہو گئی اور یہاں کی آب و ہوا بھی بہت اچھی تھی کہ جس کی وجہ سے اسے غدیر خم کا نام دیا گیا ۔[4]
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔حوالے جات
[1]. لغت نامه دهخدا، واژه «غدیر».
[2]. «الغَدِيرُ: القطعة من الماء»؛ جوهری، اسماعیل بن حماد، الصحاح (تاج اللغة و صحاح العربیة)، محقق و مصحح: عطار، احمد عبد الغفور، ج 2، ص 766، دار العلم للملایین، بیروت، چاپ اول، 1410ق.
[3]. «الغَدير: مُستنقَع ماء المطر»؛ابن فارس، أحمد، معجم مقائیس اللغة، محقق و مصحح: هارون، عبدالسلام محمد، ج 4، ص 413، انتشارات دفتر تبلیغات اسلامی، قم، چاپ اول، 1404ق.[4]. «خم البلاد: ماء و هواء»؛ ‏طریحی، فخر الدین، مجمع البحرین، تحقیق: حسینی‏، سید احمد، ج 6، ص 59، کتابفروشی مرتضوی، تهران، چاپ سوم، 1375ش.

Add new comment

Plain text

  • No HTML tags allowed.
  • Web page addresses and e-mail addresses turn into links automatically.
  • Lines and paragraphs break automatically.
2 + 11 =
Solve this simple math problem and enter the result. E.g. for 1+3, enter 4.
www.welayatnet.com
Online: 33