عترت رسول اکرم (صلی الله علیه و آله و سلم) کی فرمانبرداری کے ثمرات؛ خطبہ فدکیہ میں

Sat, 02/17/2018 - 12:35
عترت رسول اکرم (صلی الله علیه و آله و سلم) کی فرمانبرداری کے ثمرات؛ خطبہ فدکیہ میں

“ أمّا وَاللّهِ، لَوْ تَرَكُوا الْحَقَّ عَلى أهْلِهِ وَ اتَّبَعُوا عِتْرَةَ نَبيّه، لَمّا اخْتَلَفَ فِى اللّهِ اثْنانِ، وَ لَوَرِثَها سَلَفٌ عَنْ سَلَف، وَ خَلْفٌ بَعْدَ خَلَف، حَتّى يَقُومَ قائِمُنا، التّاسِعُ مِنْ وُلْدِ الْحُسَيْن ِ(عليه السلام)”
خدا کی قسم اگر انہوں نے حق – یعنی خلافت و امامت – کو اہل حق کے سپرد کیا ہوتا اور عترت رسول (صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم) اور اہل بیت (علیہم السلام) کی پیروی کی ہوتی حتی دو افراد بہی خدا اور دین کے سلسلے میں ایک دوسرے سی اختلاف نہ کرتے اور خلافت و امامت کا عہدہ لائق اور شائستہ افراد سے لائق اور شائستہ افراد کو منتقل ہوتا رہتا اور آخر کار قائم آل محمد ( عجّل اللّہ فرجہ الشّریف، و صلوات اللّہ علیہم اجمعین) کو واگذار ہوتا جو کہ امام حسین علیہ السلام کے نویں فرزند ہیں.
(بحارالأنوار، ج 36، ص 352، ح 224)

Add new comment

Plain text

  • No HTML tags allowed.
  • Web page addresses and e-mail addresses turn into links automatically.
  • Lines and paragraphs break automatically.
2 + 6 =
Solve this simple math problem and enter the result. E.g. for 1+3, enter 4.
www.welayatnet.com
Online: 34