امت رسول کا اتحاد

Sun, 11/10/2019 - 16:57
اتحاد

قارئین کرام ہمیں یہ بات ذہن نشین کرلینا چاہئے کہ امت کسی ایک قوم اورایک علاقہ کے رہنے والوں کانام نہیں ہے بلکہ سینکڑوں ،ہزاروں قوموں اورعلاقوں سے جڑکرامت بنتی ہے جو کوئی کسی ایک قوم یاایک علاقہ کو اپناسمجھتاہے اوردوسروں کو غیرسمجھتاہے وہ در اصل  امت کوذبح کرتاہے۔ امت کوٹکڑے ٹکڑے ہوکر پہلے ہم نے خود ذبح کیاہے۔یہودونصاریٰ نے تواس کے بعد کٹی کٹائی امت کوکاٹاہے۔اگرمسلمان پھرایک امت بن جائیں تو دنیاکی ساری طاقتیں مل کر بھی ان کابال بانکانہیں کرسکیں گے اورراکٹ ان کو نہیں ختم کرسکیں گے، روس اورامریکہ کی طاقتیں بھی ان کے سامنے جھکیں گی ۔لیکن اگر وہ قومی اورعلاقائی عصبیتوں کی وجہ سے باہم امت کے ٹکرے کرتے رہے تو خداکی قسم تمہارے ہتھیار اورتمہاری فوجیں تم کونہیں بچاسکیں گی۔
قرآن کریم  بھی آپس میں مل جل کر رہنے کو طاقت اور جدائی کو موت کے مترادف بتایا ہے ارشاد هورہا ہے "وَأَطِيعُوا اللَّهَ وَرَسُولَهُ وَلَا تَنَازَعُوا فَتَفْشَلُوا وَتَذْهَبَ رِيحُكُمْ۔۔"(الانفال/46)
یہ امت حضور کے خون اورفاقوں سے بنی تھی اب ہم اپنی معمولی معمولی باتوں پر امت کوتوڑرہے ہیں ۔ اگرمسلمانوں میں امت آجائے تو وہ دنیا میں ہرگز ذلیل نہ ہوں گے۔روس اورامریکہ کی طاقتیں بھی ان کے سامنے جھکیں گی اورامت پناجب آئے گا جب اذلۃ علی المومنین پر مسلمانوں کا عمل ہو ،یعنی ہرمسلمان دوسرے مسلمان کے مقابلے مین چھوٹا بننے اورذلت وتواضع اختیار کرنے کو اپنائے۔
آپ جانتے ہیں کہ منتشر اینٹیں کوئی حیثیت نہیں رکھتیں‘ انہیں یکجا کر دیا جائے تو عمارت بنتی ہے‘ بکھرے ہوئے موتی اکٹھے ہو جائیں تو گلے کا ہار بن جاتا ہے۔ امت کے تمام طبقات اس پر متوجہ ہوں پھر یہ خواب شرمندہ تعبیر ہوگا۔

 

Add new comment

Plain text

  • No HTML tags allowed.
  • Web page addresses and e-mail addresses turn into links automatically.
  • Lines and paragraphs break automatically.
7 + 4 =
Solve this simple math problem and enter the result. E.g. for 1+3, enter 4.
www.welayatnet.com
Online: 43