اعمال وعبادات

08/27/2019 - 17:14

خلاصہ: انسان ایسی مخلوق ہے جس کے مختلف پہلو ہیں، اسی لیے صرف ظاہر سے لوگوں کی حقیقت کو نہیں سمجھا جاسکتا۔

لوگوں کو کھیل کود میں مصروف کرنا، دشمن کا ہتھکنڈہ
07/23/2019 - 19:31

خلاصہ: انسان جب اپنی انسانیت اور بلند مقام کو دیکھے تو اس حقیقت کا ادراک کرسکتا ہے کہ کھیل کود کے لئے پیدا نہیں ہوا، بلکہ اللہ کی عبادت کے لئے خلق ہوا ہے۔

انسان کے اعمال اس کے صفات کی جھلک
07/22/2019 - 19:54

خلاصہ: انسان کے ظاہر اور باطن کے درمیان تعلق پایا جاتا ہے، انسان کے اعمال اس کے باطن اور صفات کی نشاندہی کرتے ہیں۔

لوگوں سے نیکی کرنے کا آخرت سے تعلق
07/22/2019 - 18:50

خلاصہ: جب انسان نیکی کرنا چاہے تو اس کی توجہ رہنی چاہیے کہ کیا اللہ تعالیٰ کی رضا کے لئے اور آخرت کی یاد میں نیکی کررہا ہے یا اپنے دنیاوی مقاصد کو پورا کرنے کے لئے بظاہر نیک کام کرتا ہے۔

دوسروں سے نیکی کرنے کے متعلق چند نکات
07/22/2019 - 16:10

خلاصہ: جب انسان نیکی کرنا چاہے تو نیکی کرنے کے لئے بعض نکات کا خیال رکھنا چاہیے تاکہ اللہ کی بارگاہ میں نیک عمل قبول ہوسکے، ایسا نہیں کہ ظاہری طور پر نیک کام ہو لیکن جیسے بھی اسے انجام دیدیا جائے قبولیت کے لائق ہو۔

دوسروں کو فائدہ پہنچانے میں مادی سوچ سے پرہیز
07/22/2019 - 16:05

خلاصہ: جب انسان نیکی کرنا چاہے تو نیکی کرنے کے لئے بعض نکات کا خیال رکھنا چاہیے تاکہ اللہ کی بارگاہ میں نیک عمل قبول ہوسکے۔

درخواست حاجت کی کیفیت
06/29/2019 - 02:43

مَنْ كٰانَتْ لَهُ إِلَی اللهِ حٰاجَةٌ فَلْیَغْتَسِلْ لَیْلَةَ الْجُمُعَةِ بَعْدَ نِصْفِ اللَّیْلِ وَ یَاٴُ تي مُصَلاّٰهُ؛”جو شخص خداوندعالم کی بارگاہ میں کوئی حاجت رکھتا ہے تو اسے چاہئے کہ شب جمعہ آدھی رات کے بعد غسل کرے، اور خدا سے مناجات کے لئے اپنی جانماز پر گریہ و زاری کرے“۔[مصباح، کفعمی، ص396۔]

سجدہ شکر
06/27/2019 - 06:17

سَجْدَةُ الشُّكْرِ مِنْ اٴَلْزَمِ السُّنَنِ وَ اٴَوْجَبِهٰا فَإِنَّ فَضْلَ الدُّعٰاءِ وَالتَّسْبِیْحِ بَعْدَ الْفَرٰائِضِ عَلَی الدُّعٰاءِ بِعَقیبِ النَّوٰافِلِ، كَفَضْلِ الْفَرٰائِضِ عَلَی النَّوٰافِلِ، وَ السَّجْدَةُ دُعٰاءُ وَ تَسْبِیحْ؛”سجدہ شکر، مستحبات میں بہت ضروری اور مستحب موکد ہے۔ ۔ ۔ بے شک واجب (نمازوں) کے بعد دعا اور تسبیح کی فضیلت، نافلہ نمازوں کے بعد دعاؤں پر ایسے فضیلت رکھتی ہے جس طرح واجب نمازیں، مستحب نمازوں پر فضیلت رکھتی ہیں، اور خود سجدہ، دعا اور تسبیح ہے“۔[وسائل الشیعة، ج 6، ص490، ح 8514۔]یہ حدیث مبارک امام زمانہ علیہ السلام کے اس جواب کا ایک حصہ ہے جو محمد بن عبد اللہ حمیری نے آپ سے سوالات دریافت کئے تہے۔ امام زمانہ علیہ السلام اس حدیث میں ایک مستحب یعنی سجدہ شکر کی طرف اشارہ فرماتے ہیں، واجب نمازوں کے بعد دعا و تسبیح کی گفتگو کرتے ہوئے اور نافلہ نمازوں کی نسبت واجب نمازوں کی فضیلت کی طرح قرار دیتے ہیں، نیز سجدہ اور خاک پر پیشانی رکھنے کے ثواب کو دعا و تسبیح کے ثواب کے برابر قرار دیتے ہیں۔

05/26/2019 - 18:00

خلاصہ: روزہ انسان پر اس قدر اثرانداز ہوتا ہے کہ انسان کے دل اور فہم و ادراک میں تبدیلی کا باعث بنتا ہے۔

روزے کے ذریعے تقوا کو طاقتور کرنا
05/26/2019 - 13:48

خلاصہ: روزہ ایسی عبادت ہے جس کے ذریعے تقوا کو طاقتور کیا جاسکتا ہے۔

صفحات

Subscribe to اعمال وعبادات
www.welayatnet.com
Online: 36